ضلع سرگودھا کے گاؤں دھوری کو مثالی گاؤں بنانے کا فارمولا

اپنے حصے کی شمع کی کرنیں اب سرگودھا میں بھی پھیلنے لگیں ۔دھوری ویلفیئر سوسائٹی زیر انتظام افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا جس کی میزبانی سناور مررڑ اور بلال مرڑ علی مرڑ اور آصف شہزاد نے کی اس موقع پر عظم کیا کہ دھوری کی تعمیر وترقی کے لیے یہ دھوری ویلفیر سوسائٹی دن رات محنت کر کے دھوری میں رفاع عامہ کے لئے کام کئے جائیں گے۔ناصر عباس تارڑ (بانی پاکستان پبلک ایڈ ٹرسٹ)نے کہا کہ اوورسیز کو فلاحی کاموں کی طرف متوجہ کیا جائے تو ستر سال میں نا حل ہونے والے مسائل خاص طور پور صاف پانی اور صفائ جیسے مسائل کو 70دن میں حل کیا جا سکتا ہے افطار ڈنر میں MPAملک صہیب احمد بھرتھ, MPA یاسر اقبال سندھ, ثنا اللہ مرڑ ایس ایچ او اور اعظم گوندل چوٹ دھیراں نے خصوصی طور پر شرکت کی۔تمام مرڑ وفیملی اور اہلیان دھوری کا شکریہ ادا کیا اور دھوری کی تعمیر و ترقی کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔تقریب میں سابقہ چیئرمین دھوری اعجاز احمد دھوریانہ نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر عملی ثبوت پیش کرتے ہوئے دھوری کے عظیم سپوت آصف شہزاد نے واٹر فلٹریش پلانٹ کا اعلان کیا اور واٹر فلٹریش پلانٹ کے لیے کمرا بھی خرید کر سوسائٹی کو وقف کر دیا مررڑ برادران نے سوسائٹی کو رکشہ عطیہ کیا محسن ریاض مررڑ نے ایک لاکھ روپے عطیہ کیا مزید اوورسیز فاونڈیشن چوٹ دھیراں کے ممبر اعظم گوندل صاحب نے دھوری ویلفیئر سوسائٹی کو 50 ہزار عطیہ کیا اسی طرح چوٹ دھیراں اوورسیز فاونڈیشن کے ممبران غلام شبیر تارڑ تصور حسین تارڑ نے بھی دھوری ویلفیئر سوسائٹی کو عطیہ کیااور طاہر عزیز گجر نے عطیہ کیا قیصر مختار دھوریانہ نے50 ہزار عطیہ کیا۔لیاقت نمبردار اور ذوالفقار احمد دھوریانہ کو اس موقع پر ابوری خزانچی مقرر کیا گیا۔ سوسائٹی کے ممبران نے عہد کیا کہ دھوری کو ایک مثالی گاؤں بنایا جائے گا۔انشاءاللہ

Leave a Comment